Chohdry Mohammad Sarwar | Pakistan Tehreek-e-Insaf
Core Member

 

ایک کامیاب کاروباری شخصیت ، ایک فلسفی اور ایک سیاستدان ، چوہدری محمد سرور  . پاکستان میں پیدا ہوئے اور ستر کی دہائی میں سکاٹ لینڈ چلے گئے اور اسی سال شادی کر لی اور ان کے چار بچے ہیں . سکاٹ لینڈ آنے کے بعد چوہدری سرور نے سکاٹش ہول سیل میں کامیابی حاصل کی ،اسکے بعد برطانوی سیاست میں پہلے مسلمان سیاستدان کے طور پر داخل ہوئے ، 

 

کاروباری کیرئر 

سال 1976 سے 1980 تک انڈی پینڈنٹ ریٹیل سٹور کے پروپرایٹر 

سال 1980 سے 1997 تک یونایٹڈ ہول سیل گروسرز کے ڈائرکٹر 

سال 2002 سے لے کر اب تک یونایٹڈ ہول سیل سکاٹ لینڈ کے ڈائرکٹر 

سال 2008 اور 2009 میں £150 کا ٹرن اوور 

 تعلیمی پس منظر  

بنیادی تعلیم : چک نمبر 331 ٹوبہ ٹیک سنگھ 

مڈل اور ہائی سکول : چک نمبر 333 ٹوبہ ٹیک سنگھ 

اعلیٰ تعلیم : گورنمنٹ کالج فیصل آباد 

 

سیاسی کیرئیر 

سال 1984 سے لیبر پارٹی کے ممبر 

منتخب کونسلر گلاسکو سٹی ، 1992 سے 1995

ڈپٹی کنوینر بورڈ گلاسکو سٹی 1992 سے 1995

گلاسکو سٹی کونسل میں دوبارہ انتخاب 1995 سے 1997

رکن جی ایم بی .. 1997 سے 

چیئرمین جنرل پرپزز کمیٹی ، گلاسکو سٹی کونسل 1995 سے 1997

برطانوی پارلیمنٹ کے پہلے مسلمان رکن 1997 سے 2001

ممبر آف سکاٹش افیرز پارلیمانی سلیکٹ کمیٹی 1999-2005

دوبارہ ممبر پارلیمنٹ منتخب ، گلاسکو ، 2001 سے 2005

ڈپٹی چیئرمین پارلیمانی لیبر پارٹی سکاٹ لینڈ 2002 سے 2003

چیئرمین پارلیمانی لیبر پارٹی سکاٹ لینڈ 2003 سے 2004

لیبر پارٹی کی ایتھنک ایگزیکٹو کمیٹی کے پہلے مسلمان ممبر 

گلاسکو سے ممبر پارلیمنٹ منتخب 2005 سے 2010

چیئرمین کمیٹی برائے سکاٹش افیرز 2005 سے 2010

ممبر لیسن پارلیمنٹری کمیٹی 2005 سے 2010

سال 2009 میں سول نا فرمانی کے دوران وزیراعظم کی جانب سے سری لنکا بھیجے والے وفد میں منتخب کئے گئے جس کی سربراہی Rt. Hon. Des Browne نے کی 

مندرجہ ذیل ممالک کے ساتھ برطانوی تعلقات کو بہتر بنانے کیلئے بھیجے جانے والے وفود کے ممبر 

موروکو-تسنیا -کویت - ایران- سعودی عرب - انڈونیشیاء 

پارلیمنٹ کے رکن منتخب ہونے کے دوران چوہدری سرور پارٹی کے تمام 20 پارلیمانی گروپس کے سرگرم رکن رہے اور پاکستان میں  APPG کے آفس ہولڈر رہے ،  APPG کے سیکرٹری رہے اور  APPG کویت کے وائس چیئرمین رہے 

 

سماجی/فلاحی کام 

چیئرمین کونسل برائے انسانی حقوق سکاٹ لینڈ 1982 سے 1992

ایگزیکٹو کمیٹی ، پاکستانی ثقافت اور معاشرتی سوسایٹی 1982 سے 1984

ایگزیکٹو ممبر اسلامک سنٹر 1980 سے 1984

جنرل سیکرٹری اسلامک سٹیٹ گلاسکو 1984 سے 1986

چیئرمین پولوک شیلڈ ڈویلپمنٹ ایسوسی ایشن گلاسکو 1988 سے 1992 

بانی ممبر اور آفس بیئرر ، ایتھنک لا سنٹر گلاسکو 

ممبر میڈیکل امداد برائے فلسطین 

چیئرمین اور بانی ممبر ، پاکستان فاونڈیشن 2000 سے 2009

چیئرمین اور بانی ممبر "یو کیئر" فاونڈیشن ، یو کے ، 2009 سے 2010

ممبر سکاٹش فرینڈز برائے فلسطین 

ایڈوائزر برائے بورڈ آف ٹرسٹیز ، تعلیم ٹرسٹ گلاسکو 

ایڈوائزر برائے یوتھ کاونسلنگ سروس ایجنسی گلاسکو 

 

ایڈوائزر ان بورڈ فار یونیورسٹی آف مینجمنٹ اینڈ ٹیکنالوجی 

مہم سازی اور فلاحی  کام 

 پاکستان میں 2010 کے سیلاب کے بعد ایک کامیاب مہم چلا کر ایک ملین پونڈ اکٹھے کئے اور پاکستان میں ایک ہزار گھر تعمیر کروائے 

یو کیئر کے لئے ایک کامیاب مہم چلائی جسکے نتیجے میں پاکستان کے دیہاتی علاقوں میں مفت علاج کے تین ہسپتال تعمیر ہوئے ، پہلا ہسپتال 2006 میں کھلا اور اب ماہانہ 5000 سے زائد مریضوں کا علاج کرتا ہے 

صوبے کے ایمرجنسی شعبے میں وزیراعلیٰ پنجاب کے ساتھ کام کیا جسکے نتائج میں سے ایک ریسکیو 1122 کا قیام پزیر ہونا تھا جو کہ پنجاب کی ایک بہترین ایمرجنسی سروس تھی 

گلاسکو میں گردوارے کی تعمیر کیلئے سکھ برادری کا بھرپور ساتھ دیا 

گلاسکو میں ایک نے قبرستان کیلئے مسلمانوں کی بھرپور مدد کی جسکے نتیجے میں تیس ایکڑ کا ایک مسلم قبرستان بنا جو کہ اگلے پچاس سے ساتھ سالوں کیلئے کافی ہوگا 

برٹش پاکستانی لڑکی کی پاکستان میں زبردستی شادی سے اسکو بچایا 

سکاٹ لینڈ کے شپ یارڈ کو بچانے کیلئے موثر مہم چلائی 

سات جولائی کے سانحہ کے بعد تمام برادریوں سے ملے تا کہ امن قائم رہے 

اقوام متحدہ کی اس قرارداد پر عمل درامد کروانے کیلئے مہم چلائی جسکے تحت فلسطین کو پر امن اور آزادانہ طور پر رہنے کا حق حاصل ہے 

ان وفود کی قیادت کی جو ویسٹ بینک اور غزہ گئے اور لوگوں پر ہونے والے مظالم دیکھے 

مسئلہ کشمیر کے پر امن حل کیلئے بھارت اور پاکستان کے درمیان مہم چلائی 

بوسنیا کے لوگوں کو بچانے کی مہم کے پانی ممب 

عورت کے حقوق کیلئے مہم چلائی تاکہ زبردستی شادیاں نہ ہوں اور نہ ہی گھریلو تشدد 

سانحہ 9/11 کے بعد برطانیہ میں مہم چلائی تا کہ مسلمانوں کے خلاف لوگوں کے جذبات نہ بھڑکیں 

عراقی جنگ کے خلاف پارلیمنٹ میں مہم چلائی