PTI Women Press Conference (2 May,2016)

Tuesday, 03 May 2016 18:51 | READ 971 TIMES Written by 
RATE THIS ITEM
(0 votes)


چیئرمین سیکرٹریٹ ،پاکستان تحریک انصاف پنجاب

11 ۔ایبک بلاک ، نیوگارڈن ٹاؤن لاہور

پریس کانفرنس نیوز 3 مئی،2016

لاہور ( )پاکستان تحریک انصاف کی مرکزی صدر وومن ونگ منزہ حسن اور پنجاب وومن ونگ کی صدر سلونی بخاری نے چیئرمین سیکرٹریٹ لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ جس میں وومن ونگ پنجاب اور لاہور کی خواتین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ،تحریک انصاف کے رہنماؤں نے 2 مئی کو پاکستان تحریک انصاف جلسہ میں مسلم لیگ (ن) کی خواتین کی جانب سے لگائے جانے والے الزامات کا جواب دیتے ہوئے کہاکہ مسلم لیگ (ن) کی خواتین اس سیاسی پارٹی کی جانب انگشت نمائی کررہی ہیں، جس میں خواتین کی شرکت ہمیشہ سے بھرپوررہی ہے ، جلسوں اور دھرنوں میں شرکت ہو، کسی اہم مسئلے پر سیاسی طور پر آواز اٹھانا ہو ،پی ٹی آئی کا کردار ہمیشہ نمایا ں رہا ہے اور پاکستان تحریک انصاف کی خواتین نے ہمیشہ باوقار طور پر اپنا کردارنبھایا ہے ، لہذا انہیں آواز اٹھانے کے لئے کسی بیرونی مدددرکار نہیں ،انہوں نے کہاکہ کیا یہ مقام حیرت نہیں کہ جو پارٹی پی ٹی آئی خواتین پر اخلاق سے گرے ہوئے فقرے کسنے میں شہرت رکھتی ہیں اسے آج یکا یک پی ٹی آئی کی خواتین کا درد کیوں محسوس ہو رہا ہے ، کہیں اس وجہ یہ تو نہیں کہ یہ تمام واقعہ مسلم لیگ (ن) نے خود اپنے گلوں بٹوں کی مدد سے انجام دیا تھااور پھر خود نبرہ کرنے بیٹھ گئے ، واہ چوپڑی اور دو دو، اگر کچھ پیچھے نظر دوراہیں تو کیا وہ وہی پارٹی نہیں جس کے احکامات پر پولیس نے ماڈل ٹاؤن میں خواتین کو ٹانگوں اور بازوؤں سے پکڑ کر گھسیٹی ہوئی نظر آتی ہے اور ان کے چہروں پر فائرنگ کرتی رہی، کیا یہ وہی پارٹی نہیں جس کے حکم پر لاہور کے تمام داخلی راستوں کو کنٹینر لگا دیئے گئے تھے اور یہی مائیں ، بہنیں اور بیٹیاں ان کے نیچے رینگنے پر مجبور کردی گئی تھیں، اگر مسلم لیگ (ن) اپنی یاداشت پر زور دے تو اس کے متوالے فیصل آباد میں پی ٹی آئی کی خواتین کو ہراساں کرتے رہے جس کی وڈیو تاحال نیٹ پر دستیاب ہے، پی ٹی آئی کی خواتین کی عزت و ناموس پر تفکر کی نام نہاد دعویداروں کو ماڈل ٹاؤن کی خواتین کے لئے انصاف مانگنا کیوں یاد نہیں آتا، کیوں کیا یہ (ن) لیگ کے مفاد میں نہیں، (ن) لیگ کو اگر فکر ہے کہ والدین اپنی بچیوں کو پی ٹی آئی کے جلسوں میں آنے کی اجازت نہیں دیں گے تو انہیں یہ بھی سوچنا پڑے گاکہ صوبائی کھیلوں اور ثقافت کے نام پر ہونے والی محفلوں میں نوجوان بچیاں محفلوں میں مشغول ہوتی ہیں وہ اخلاقیات کی کون سی قسم کا پر چار کررہی ہوتی ہیں ، ہم پاکستان تحریک انصاف کی خواتین گلوبٹوں کے ذریعے پی ٹی آئی کے جلسوں میں خواتین کے ساتھ بدتمیزی کروانے اور اور پھر اس پر مگرمچھ کے آنسو بہانے کی شدید مذمت کرتی ہیں، ان کی غیرت اس وقت کہاں تھی جب PAT کی نہتی بچیوں پر سیدھی گولیاں چلائی گئیں ، ہمیشہ ہم رانا ثناء اللہ کی اخلاق سے گری ہوئی گفتگو سنتے رہے اب یہ ٹھیکہ انہوں نے اپنی خواتین کو دے دیا ہے ، مسلم لیگ (ن) کا ہمیشہ یہی وطیرہ رہا ہے کہ یہ ہمیشہ اخلاق سے گری ہوئی حرکتیں کرتے ہیں اور یہ روایت اب بھی جاری ہے۔اس موقع پر ایم پی اے و جنرل سیکرٹری وومن ونگ سعدیہ سہیل، روبینہ جمیل صدر وومن ونگ لاہور، طلعت نقوی ، سمیراعابد ، نیلوفر حبیب ، مصباح عدنان، رافع کمال ،عاصمہ نعیم ، ایم پی ایز شنیلہ روتھ، ڈاکٹرنوشین حامد معراج ، روبینہ جمیل، عائشمہ شجاع سمیت دیگر بھی موجود تھیں۔

میڈیاسیل

3-may2-5-16 URGENT PTI Women Press conference new