CM KPK Addressing Khandar Nowshera

Thursday, 18 May 2017 07:41 | READ 378 TIMES Written by 
RATE THIS ITEM
(0 votes)

بہ تسلیمات پریس سیکرٹری برائے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا
ہینڈ آوٹ نمبر1 ۔پشاور۔12 مئی2017 ء
وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ وہ چین کے حالیہ دورہ پروزیر اعظم نوازشریف کے ساتھ جارہے ہیں چین میں ایک بہت بڑا روڈ شوہونے جارہا ہے جس میں 28 ممالک کے سربراہ شرکت کریں گے۔ چین پوری دُنیا کو اپنے ساتھ لیکر جانا چاہتا ہے۔ چین دُنیا کو اپنی زمینی او رسمندر ی راستوں سے ملانا چاہتا ہے تاکہ تجارتی اور اقتصادی ترقی کے ثمرات دُنیا بھر میں پھیلائے جائیں۔ خیبرپختونخوا اور چین کے ساتھ ہونے والے معاہدوں پر تیزی سے عمل درآمد شروع ہوچکا ہے اور تقریبا24 ارب ڈالر کے معاہدوں کے لیے چین سرمایہ کار اور چینی کنسورشیم میں شامل حکومتی اور نجی ادارے خیبرپختونخوا پہنچ چکے ہیں۔ اسی کے ساتھ دیگر کئی ممالک بھی خیبرپختونخوا میں تجارت اور سرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتے ہیں۔جس سے خیبرپختونخوا میں صنعتی اورتجارتی انقلاب برپا ہوگا اور صوبے میں بے روزگاری میں بڑی حدتک کمی آئے گی۔ تحریک انصاف کی صوبائی حکومت کی اولین ترجیح صوبے کے عوام ہیں پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی سیاست کا محور صوبے کے عوام پر صوبے کے وسائل خرچ کرنا ہے۔ نظام کی تبدیلی کے ثمرات عام آدمی تک پہنچنا شروع ہوچکے ہیں۔ سابقہ حکومتوں نے اس صوبے کے عوام پر کوئی توجہ نہیں دی۔ ان کی سیاست اور حکومت کامحور کرپشن ،لوٹ کھسوٹ ،اقرباء پروری، تقریوں اور تبادلوں کی قیمتیں وصول کرنا اورٹھکیوں پر ایڈوانس کمیشن کی وصولی تھی جبکہ تحریک انصاف کی حکومت انصاف اور میرٹ پر مبنی معاشرے کی تشکیل کی طرف گامز ن ہے۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے نوشہرہ کے علاقے کھنڈر میں حاجی خیبرخان اور سکندر خان کی رہائش گاہ پر بڑے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سینکڑوں افراد اور نوجوانوں نے دیگر سیاسی پارٹیوں سے مستعفی ہوکر پاکستان تحریک انصاف میں شمولیت کااعلان کیا۔ اس موقع پر صوبائی وزیر ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن میاں جمشید الدین کاکاخیل، ضلع ناظم نوشہرہ لیاقت خان خٹک ،حاجی خیبرخان، سکندر خان اصغر خان، یونین کونسل کابل ریور کے صدر سجاد حسین پراچہ نے بھی خطاب کیا۔ پرویز خٹک نے جلسے سے خطاب اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ خیبرپختونخوا حکومت عوام کی امنگوں پر پورا اترنے کے لیے 2013کے انتخابی منشورپر من وعن عمل کررہی ہے اوریہی وجہ ہے کہ عوام کی بڑی تعداد مختلف دینی اور سیاسی جماعتوں سے مستعفی ہوکر پی ٹی آئی میں شامل ہورہی ہے اوریہی پی ٹی آئی کی کامیابی کی علامت ہے کہ ہم نے عوام کے دل جیتے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ماضی میں ا س صوبے میں حکومت کرنے والوں نے ستر سالوں سے اس صوبے کے عوام کے ساتھ مذاق کیا اورعوام کااستحصال کیا جاتا رہا۔ سابقہ ایم ایم اے، اے این پی اور پی پی پی کی حکومتوں نے تو انتہا کردی۔ ان کام مطمع نظر صرف قومی دولت لوٹنا تھا اور انھوں نے اپنی تجوریاں بھرنے کے سوا عوام کی کوئی خدمت نہیں کی۔ یہی وجہ ہے کہ 2013 کے انتخابات میں عوام نے اپنے ووٹ سے ان کااحتساب کیا اور ان کواپنی حیثیت یا د دلادی۔ اب ایک با ر پھر یہی لوگ نئے لبادے میں عوام کو دھوکہ دینے کے لے سرگرم عمل ہوچکے ہیں مگر عوام باشعور ہیں وہ کھرے اور کھوٹے میں تمیز کرسکتے ہیں۔ پرویز خٹک نے کہا کہ پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت اور سابقہ حکمرانوں میں واضح فرق ہے۔ پی ٹی آئی نے میرٹ پر بھرتیوں کاآغاز کیا۔ پولیس ،اساتذہ اور ڈاکٹروں سمیت تمام بھرتیاں این ٹی ایس کے ذریعے کی گئی ہیں تاکہ حقداروں کو ان کا حق ملے اور قابل لوگ آگے آئیں جس کا فائدہ براہ راست غریب عوام کوہورہا ہے۔ اب تک 45ہزار اساتذہ بھرتی کیے گئے ۔ اسی طرح صوبے میں دیگر محکموں میں بھی بھرتیاں کی گئیں اور سب کی سب میرٹ پر کی گئی ہیں۔ جس میں یہ نہیں دیکھاگیا کہ ان نوجوانوں کا کس سیاسی جماعت سے تعلق ہے صرف قابلیت اور میرٹ پر ان کوبھرتی کیا گیا۔ماضی میں انہی نوجوانوں سے ان کی اپنی سیاسی جماعتوں کے قائدین اور گماشتوں نے لاکھوں روپے کے عوض نوکریاں فروخت کیں اوررشوت لے کر مرضی کے اسٹیشن پر تبادلے کروائے۔ اسی طرح ٹھیکیوں میں بیس فیصد ایڈوانس کمیشن وصول کیا گیاپرویز خٹک نے کہاکہ میں نے اپنی آنکھوں سے انکے دفاتر میں نوٹوں کی بوریاں بھری ہوئی دیکھیں۔ انھوں نے کہاکہ پی ٹی آئی صوبے کی تاریخ بدلنے جارہی ہے۔ ہم 2018 کے انتخابات میں پہلے سے زیادہ اکثریت سے جیتیں گے اور نہ صرف خیبرپختونخوا بلکہ چاروں صوبوں اور وفاق میں پی ٹی آئی کی حکومت بنے گی مخالفین کے وکلاء بھی یہی کہہ رہے ہیں کہ آئندہ وزیر اعظم عمران خان ہی ہوں گے۔ انہو ں نے کہا کہ ہمارے مخالفین بوکھلاہٹ کا شکار ہیں ہم ان کوبھاگنے نہیں دیں گے اور لوٹی ہوئی دولت کی ایک ایک پائی وصول کریں گے۔ اب یہ قوم مزید کرپشن برداشت کرنے کے قابل نہیں رہی۔ کرپشن نے اس ملک کی بنیادوں کو کھوکھلا کردیا ہے۔ پرویز خٹک نے کہا کہ قرضے لینا اس ملک کے عوام کی کوئی خدمت نہیں جو ممالک پاکستان کو قرضے دے رہے ہیں وہی اپنی پالیسیاں ہم پر مسلط کررہے ہیں وفاقی حکومت کو چاہیئے کہ وہ ہوش کے ناخن لے۔ چھوٹے صوبوں کا استحصال بند کرے اور ان کوان کا حق دے۔ انھوں نے کہا کہ ہم بجلی اور گیس کے خالص منافع اور صوبے کے وسائل پرکوئی سمجھوتہ نہی کریں گے اور صوبے کا ایک ایک حق لیکر رہیں گے پی ٹی آئی کی حکومت نے تاریخ بدل دی ہے اور مشترکہ مفادات کونسل میں صوبے کے حقوق کے فیصلے اور معاہد ے کئے ہیں ہماری تعلیم اور صحت پالیسی سب کے سامنے ہے پولیس اور پٹوار کلچر میں واضح تبدیلی ہوچکی ہے۔ اب اساتذہ سکولوں اور ڈاکٹر ہسپتالوں میں حاضر ہیں ۔ ہماری پالیسی کانتیجہ ہے کہ پچاس ہزار بچے اور بچیاں نجی تعلیمی اداروں سے سرکاری سکولوں میں داخل ہوچکے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ پی ٹی آئی اس ملک کی بڑی سیاست قوت بن چکی ہے ہم نے اپنے صوبے میں جوبلدیاتی نظام دیا تاریخ میں اس کی مثال نہیں ملتی ہم نے تیس فیصد فنڈ مقامی حکومتوں کومنتقل کئے۔ انھوں نے کہاکہ بعض عناصر کے پاس ہمارے خلاف کہنے کے لے کچھ نہیں اس لیے وہ میڈیا کا سہارا لیکر ہمارے خلاف بے پرکیاں اڑا رہے ہیں مگر ان کومنہ کی کھانی پڑے گی۔ وزیراعلیٰ نے پی ٹی آئی میں نئے شامل ہونے والوں کاخیر مقدم کیا۔ انہوں نے کلپانی نالے پر حفاظتی پشتے تعمیر کرنے، کھنڈر مردارہ لفٹ ایری گیشن سکیم کی از سر نو تعمیر اور کھنڈر سمیت پی کے سولہ میں جلد ترقیاتی منصوبوں پر کام شروع کرنے کا اعلان کیا جبکہ کھنڈر میں دو سکولوں کو ہائی کا درجہ دینے اور سڑکوں نالیوں اور پلوں کی تعمیر کرنے کا بھی اعلان کیا۔
<><><><><><><><><>

12-may12-5-17---PHOTO--- chief minister addressing khandar nowshera ----------r