CM KPK role euologised by UNICEF on Ant-polio steps and meeting with PAF

Sunday, 16 April 2017 20:37 | READ 140 TIMES Written by 
RATE THIS ITEM
(0 votes)


یونیسیف اور برطانوی مشن اہلکاروں کی وزیراعلیٰ سے ملاقات، سماجی اصلاحات، پولیو خاتمے اور بچوں کی صحت کیلئے اقدامات کی تعریف
وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے پولیو کی خطرناک صورتحال کے پیش نظر عمران خان کی زیرقیادت پولیو سے متعلق عوامی آگاہی مہم شروع کی اور پولیو کے خاتمے کیلئے اس مہم کی کامیابی کو اولین ترجیحات میں شامل کیا۔انہوں نے عندیہ دیا کہ اب ہم اسے تعلیمی نصاب کا حصہ بھی بنا رہے ہیں۔ صوبے بھر میں پینے کے پانی کو آلودگی سے پاک کرنے، ہر شہر اور گاؤں کی سطح پر حفظان صحت کی بہتری اور زچہ و بچہ کی صحت و غذائی ضروریات کیلئے بھی موثر اقدامات کئے جا رہے ہیں جن میں ہمیں یونیسیف کی اضافی مالی و فنی معاونت درکار ہے مشن نے صوبے میں شیر خوار بچوں کی شرح اموات میں کمی کیلئے دس نیوناٹولوجی یونٹس کے قیام اور صاف پانی کی ٹیسٹنگ بالخصوص دریا کنارے آبادی کیلئے موبائل لیبارٹریوں کے قیام سمیت مالی و فنی تعاون میں نمایاں اضافے کا یقین دلایا۔اقوام متحدہ کے عالمی فنڈ برائے اطفال (یونیسیف)کے مشن نے چیف فیلڈ چارلس نوزوک کی زیر قیادت گزشتہ روز وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں وزیراعلیٰ پرویز خٹک سے ملاقات کی اور باہمی دلچسپی کے اُمو ر پر تبادلہ خیال کیا ۔مشن میں پولیو ٹیم لیڈر ڈاکٹر جوہر، پروگرام سپیشلسٹ فرمان علی، نیوٹریشن آفیسر ڈاکٹر عبدالجمیل، ایجوکیشن ٹیم لیڈر سید فواد شاہ اور واش آفیسر رحمان اللہ شامل تھے۔مشن نے خیبر پختونخوا میں پولیو کے خاتمے، نومولود بچوں کی شرح اموات میں کمی اور حفظان صحت کی صورتحال بہتر بنانے کیلئے صوبائی حکومت کے اقدامات کو اطمینان بخش اور باقی صوبوں کیلئے مثالی قرار دیا اور اس ضمن میں وزیراعلیٰ پرویز خٹک کے فعال کردار کو سراہا ہے ۔ مشن نے انکشاف کیا کہ ماضی میں پولیو کا گڑھ کہلائے جانے والے شہر پشاور میں گزشتہ چھ ماہ سے جمع کردہ آلودہ پانی اور دیگر مواد کے سیمپل میں پولیووائرس کے کوئی آثار نہیں ملے اور اگلے سروے میں بھی وائرس نہ ملنے پر پشاور کو باضابطہ پولیو فری شہر قرار دیدیا جائے گا البتہ گزشتہ سال ستمبر میں کوہستان میں ایک پولیو کیس سامنے آنے کے سبب انسدادی مہم جاری رکھی جائے گی ۔مشن نے اگلے مرحلے میں غذائی قلت کی وجہ سے شیرخوار بچوں کی اموات کی روک تھام کیلئے یونیسیف کی ہمہ گیر مہم میں بھی معاونت کی درخواست کی پرویز خٹک نے مہم کا خیرمقدم کرتے ہوئے اس مقصد کیلئے یونیسیف کی منشا کے مطابق متعلقہ صوبائی محکموں کا اعلیٰ سطح اجلاس بلانے کی ہدایت کی تاکہ نونہالوں کی شرح اموات جیسے نازک قومی مسئلے کا موثر سدباب ممکن بنایا جا سکے۔ انہوں نے یونیسیف سے سی پیک کے تناظر میں چترال تا ڈیرہ اسماعیل خان پورے صوبے اور فاٹا و ایف آر سمیت ملحقہ قبائلی علاقہ جات میں انسداد پولیو، بچوں کی شرح اموات میں کمی اور واٹسن و واش کے تحت پروگراموں سمیت حفظان صحت کی صورتحال بہتر بنانے کیلئے حکومتی اقدامات میں معاونت کی درخواست کرتے ہوئے یقین ظاہر کیا کہ اخلاص اور عوامی آگہی کی بدولت پاکستان کو پولیو جیسے ناسور سے نجات دلانے کے علاوہ قومی صحت کا خواب بھی شرمندہ تعبیر بنایا جا سکے گا وزیراعلیٰ نے مشن کے استدلال سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں پولیو وائرس کا پھیلاؤ افغان مہاجرین کی وجہ سے ہوا ہے اسلئے دونوں ممالک کو مشترکہ کوششوں سے اس موذی مرض کا خاتمہ کرنا ہوگا۔ درایں اثناء برطانوی ہائی کمیشن کے سیاسی قونصلر ولیم میڈلٹن سے وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں ملاقات کے دوران پرویز خٹک نے برطانوی سرمایہ کاروں کی جانب سے سی پیک حوالے سے مختلف شعبوں بالخصوص سیمنٹ کی صنعت میں بھاری سرمایہ کاری کی پیشکش کا خیرمقدم کیا اور اس ضمن میں صوبائی حکومت کی جانب سے اعلان کردہ پرکشش مراعات و ترغیبات اور سیکورٹی و گارنٹیوں کا احاطہ کرنے کے علاوہ مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کیلئے صوبائی حکومت کے تیارکردہ ایک سو سے زائد منصوبوں کی تفصیلات سے انہیں اگاہ کیا انہوں نے بتایا کہ صنعت و معیشت کے علاوہ تعلیم و صحت، سیاحت، معدنیات، توانائی و زراعت اور سیکورٹی کے شعبوں میں اصلاحات اور ٹھوس اقدامات کی بدولت صوبے میں ترقی اور سرمایہ کاری کی نئی فضاء قائم ہوئی ہے نظام حکومت سے متعلق بعض سولات پر وزیراعلیٰ نے واضح کیا کہ شہروں سے بھی زیادہ دیہات کی سطح پر ترقی و خوشحالی پر مبنی نیا بلدیاتی نظام متعارف کرکے اور اسے اضافی وسائل اور اختیارات دے کر ہم نے عوام کو مقامی سطح پر بااختیار بنانے، دیہی آبادی کی شہروں کو نقل مکانی کا رجحان ختم کرنے اورہر سطح پر متوازن ترقی کا نیا وژن متعارف کیا ہے جو پورے ملک کیلئے مثال بن چکا ہے عوام نے بھی نہ صرف ان اصلاحات کو قبول کیا ہے بلکہ اداروں پر ان کا اعتماد بحال ہوا اور احساس ملکیت کے ساتھ حکومتی اداروں اور حکام سے تعاون پر آمادہ ہوئے ہیں۔
<><><><><><><><><><><>
ہینڈ آوٹ نمبر۔2۔پشاور۔16 اپریل2017 ء
وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے پاکستان ایئر فورس کی معاونت سے تعمیر ہونے والے تعلیمی منصوبوں ایویشن ٹریننگ سنٹر اور ایئر یونیورسٹی کیمپس کیلئے چار سو کنال مجوزہ اراضی ایئر فور س کو منتقل کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ انہوں نے ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نوشہرہ کو ہدایت کی ہے کہ وہ فی الوقت ایویشن ٹریننگ سنٹر کیلئے کرائے پر مناسب عمارت بھی تلاش کریں تاکہ جب تک سنٹر کی اپنی عمارت تیار نہیں ہو جاتی تربیتی سرگرمیوں کو شروع کیا جا سکے ۔وہ گزشتہ روز وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں ایئر فورس کی معاونت سے صوبے میں تعمیر ہونے والے مختلف منصوبوں پر پیش رفت کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔اس موقع پر وزیراعلیٰ کے مشیر برائے فنی تربیت نے اجلاس کو بتایا کہ پاکستان ایئر فورس کی ٹیم نے ٹریننگ سنٹر اور ایئر یونیورسٹی کیمپس کیلئے مجوزہ سائٹ کا وزٹ کیا ہے اور اُسے مذکورہ مقاصد کیلئے مناسب قرار دیا ہے ۔انہوں نے بتایا کہ دونوں منصوبے ٹریننگ سنٹر اور ایئر یونیورسٹی کیمپس اُسی ایک جگہ پر مشترکہ قائم کئے جا سکتے ہیں۔ ٹریننگ سنٹر کے سٹاف کی تنخواہوں اور آلات کی خریداری کیلئے ٹیوٹا کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے پہلے سے فنڈ کی منظوری دے دی ہے جبکہ عمارت کی تعمیر کیلئے فنڈز درکار ہوں گے ۔وزیراعلیٰ نے اس مقصد کیلئے پہلے سے نشاندہی کی جانے والی چارہزار کنال اراضی کو ایئر فورس کے حوالے کرنے کی ہدایت کی ۔پرویز خٹک نے پاکستان ایئر فورس کیڈٹ کالج کے قیام کے حوالے سے کہا کہ کالج کا قیام ایسے علاقے میں عمل میں لایا جائے جہاں پہلے سے کوئی کیڈٹ کالج موجود نہ ہو۔انہوں نے ایس ایم بی آر کو ہدایت کی کہ وہ ایسی جگہ جہاں پہلے سے پبلک / کیڈٹ کالج موجود نہیں ہے وہاں مطلوبہ ایک ہزار کنال زمین تلاش کرکے پاکستان ایئر فورس کو منتقل کریں ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ اُن کی حکومت صوبے کے مستقبل کی فکر رکھتی ہے ۔بہت سے ایسے منصوبے شروع کئے جارہے ہیں کہ جن کی تکمیل میں کچھ وقت لگے گامگر وہ صوبے کے عوام کی تقدیر بدلنے کیلئے سنگ میل ثابت ہوں گے ۔وزیراعلیٰ نے پی اے ایف کو میگا پراجیکٹ کیلئے درکار چار ہزار کنال اراضی تلاش کرنے کی ہدایت کی جو ادائیگی پر ایئر فورس کو منتقل کی جائے گی ۔وزیراعلیٰ نے ورسک روڈ پر پی اے ایف ہاوسنگ سوسائٹی کے قریب Dallas drain پرحفاظتی دیوار کی تعمیر کے حوالے سے ہدایت کی کہ اس سلسلے میں وسائل کی فوری فراہمی اور دیوار کی بروقت تعمیر کیلئے متعلقہ محکمے سے بات کریں ۔انہوں نے ایم ون ۔171 ہیلی کاپٹر کی اوور ہالنگ کیلئے ٹینڈر کا عمل جلد مکمل کرنے کی ہدایت کی ۔انہوں نے صوبائی حکومت کے ہیلی کاپٹر کیلئے ایئر کرافٹ ہنگر کی تعمیر جلد شروع کرکے منصوبے کو ترجیحی بنیادوں پر مکمل کرنے کی ہدایت کی اور کہاکہ منصوبوں کی پیش رفت پر باقاعدگی سے فیڈ بیک دیا جائے ۔
<><><><><><><>