CM KPK talking to media with Malaysian Ex-premier

Wednesday, 05 April 2017 14:44 | READ 163 TIMES Written by 
RATE THIS ITEM
(0 votes)

With the compliment of Press Secretary to Chief Minister Khyber Pakhtunkhwa
Handout No.1 Peshawar 4th April 2017

Khyber Pakhtunkhwa Chief Minister Pervez Khattak said CPEC has enhanced the strategic importance of KP opening it to both domestic and foreign investment. The provincial government has already planned the natural advantages of the province to be the economic base of the province. It opened all the potential advantages of the province to the investors and gave a policy for investment facilitation including introduction of one window operation and other unmatched incentives to investors, he added.

He was sharing details with media about three MoUs signed with the Malaysian investment team led by the Ex-premier of Malaysia Abdullah Ahmad Badawi at Chief Minister House Peshawar today. Advisor to Chief Minister for Industries Abdul Karim Khan, Advisor on Planning and Development Mian Khaliqur Rehman, Provincial Chief Secretary Abid Saeed, Administrative Secretaries of Finance, Energy, Planning and Development and other concerned departments, heads of EZDMC, OGDCL, BOK, other industrial and commercial concern as well as local industrialists also participated in the ceremony.

The ex-premier of Malaysia and his team signed three MoUs for investment in Islamic Banking, Oil & Gas, Hydel Power Generation, Trade & Commerce, Industrialization and Agriculture. The Malaysian investors would setup a Halal meat processing plant at Ghazi, Introduce certified Halal Polio vaccine and Islamic micro Finance Bank etc.

Chief Minister said that the steps of the present provincial government for industrialization and investment in the province made it the most attractive destination for both national and international investment. The government has already announced its industrialization policy giving the right kind of attractions for investment facilitation in different sectors of the province. He reminded that it was some three months back, his government decided a separate security force to give security cover to all industrial zones and investment in the backdrop of CPEC. The officers and officials to be part of the new force had already been identified and he had already directed for their induction into the new force.

Pervez Khattak said that his government invited the Islamic World to come here and invest in the natural advantages, the province of KP offered and get more dividend. He assured for the security and safety of their investment in Khyber Pakhtunkhwa. He said that his government has given a one window operation for investment facilitation in the province.

The Chief Minister welcoming the Malaysian investment, recognized the expertise of the Ex-premier Abdullah Ahmad Badwi who took his nation to the new height of development and earned a respectable place in the Islamic world for his nation and hoped that his province needed to replicate what Abdullah Ahmad Badwi did for his nation. He said that Khyber Pakhtunkhwa because of its nearness to Afghanistan, Central Asian Republics and China had gained much importance not only for trade and economic activities but it would bring different civilizations and cultures closer to each other as well. He told the media that in the recent past investors of China, Iran, Canada, Denmark, England and some other Islamic and European countries demonstrated their willingness to invest in the natural advantages of KP province.

The Chief Minister said that his government was fully aware of the impact; CPEC had brought along and converted the locational disadvantages of the province into its strategic importance for trade, commerce, industrialization and investment. We are fully aware of the changing scenario and we have geared up to take the new role. He assured that the investment coming in different sectors including industrialization and trade and commerce, environment, agriculture, mines & mineral and culture would be given guarantee and the safety of their investment would be ensured. His government was holding a road show in Beijing towards the end of 2nd week of the current month for marketing different projects of the province, he concluded.

<><><><><><><><><>

بہ تسلیمات پریس سیکرٹری برائے وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا
ہینڈ آؤٹ نمبر1 پشاور 4اپریل 2017
وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ موجودہ صوبائی حکومت نے اپنے حقیقت پسندانہ اقدامات کی بدولت صوبے کو قومی اور بین الاقوامی سطح کی سرمایہ کاری کے لئے پرکشش بنا دیا ہے اورصوبے کی قومی و عالمی اہمیت بڑھنے کے سبب صوبے میں صنعتی و معاشی سرگرمیوں کے نئے دروازے کھلنے لگے ہیں۔انہوں نے عالمی برادری بالخصوص اسلامی دنیا کے سرمایہ کاروں کو دعوت کا اعادہ کیا کہ وہ پورے اعتماد کے ساتھ خیبر پختونخوا میں سرمایہ لگائیں جبکہ صوبائی حکومت اور عوام دونوں سطح پر ان کا مکمل اخلاص کے ساتھ خیر مقدم کیا جائے گا۔ انہوں نے اس یقین دہانی کا بھی اعادہ کیا کہ سرمایہ کاروں اور سرمائے دونوں کی سیکیورٹی اور گارنٹی ہمارے ذمے ہو گی نیز انہیں ون ونڈو آپریشن کے تحت تمام سہولیات انکی دہلیز پر مہیا کی جائیں گی۔ صوبائی حکومت سی پیک کے تناظر میں سرمایہ کاری اور صنعتی بستیوں کی مکمل سکیورٹی کیلئے ایک علیحدہ فور س بھی بنا چکی ہے یاد رہے کہ اس فورس کیلئے درکار افسران اور اہلکاروں کی نشاندہی وزیراعلیٰ ہی کی زیر صدارت منعقدہ اجلاس میں تین ماہ قبل ہو چکی ہے جبکہ اب اُن کی تعیناتی اور فعالیت کا طریقہ کار بھی حتمی مراحل میں ہے ۔ وہ وزیر اعلیٰ ہاؤس پشاور میں ملائشیاء کے سابق وزیر اعظم عبداللہ احمد بداوی کی معیت میں سرمایہ کاروں کے گروپ کے ساتھ اسلامی بینکاری، تیل و گیس و پن بجلی اور صنعت و زراعت کے شعبوں میں تین مختلف معاہدوں کے بعد میڈیا بریفینگ سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر ہونے والی مفاہمت کی تین یادداشتوں کے تحت ملائیشیا ملٹی ملین ڈالر سرمایہ کاری سے خیبر پختونخوا میں اسلامی مائیکرو فنانس بینک کے قیام کے علاوہ اسلامک ہولڈنگ کمپنی قائم کرے گا، غازی کے مقام پر حلال گوشت کا پراسسنگ یونٹ قائم کیا جائے گا نیز مستند حلال پولیو ویکسین متعارف کی جائے گی جبکہ بینک آف خیبر اور ازمک اس سلسلے میں سرمایہ کاروں سے قریبی معاونت کرے گا۔ وزیر اعلیٰ کے مشیر برائے صنعت عبدالکریم، صوبائی چیف سیکرٹری عابد سعید، خزانہ، منصوبہ بندی و ترقیات، توانائی اور دیگر محکموں کے انتظامی سیکرٹریوں نیز ازمک، او جی ڈی سی ایل اور دوسرے صنعتی پیداوری شعبوں کے سربراہوں کے علاوہ بعض چیدہ مقامی صنعتکار بھی اس موقع پر موجود تھے۔وزیر اعلیٰ نے صوبے میں ملائشین سرمایہ کاری کا خیر مقدم کرتے ہوئے اعتراف کیا کہ اپنی بہترین اصلاحات کی بدولت ملائشیا نے تمام شعبوں میں دن دگنی رات چوگنی ترقی کی ہے اور امت مسلمہ میں نمایاں مقام حاصل کیا ہے جبکہ انکے تجربے اور سرمائے سے خیبر پختونخوا میں ترقی کے نئے افق روشن ہو نگے ۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان ، چین اور وسطی ایشیائی ریاستوں سے قربت کے سبب خیبر پختونخوا نے تہذیب و تمدن اور ثقافت کے ساتھ ساتھ صنعت و حرفت اور معیشت کے لحاظ سے زبردست اہمیت حاصل کر لی ہے۔ چین، ایران ، کینیڈا، ڈنمارک اور برطانیہ سمیت کئی اسلامی اور یورپی ممالک نے یہاں سرمایہ کاری میں گہری دلچسپی کا مظاہرہ کیا ہے۔ پرویز خٹک نے کہا کہ سی پیک کے تحت ہمارا صوبہ معاشی اور کاروباری حوالے سے کئی گنا زیادہ اہمیت اختیار کر چکا ہے جبکہ ہم نے بھی بدلتے حالات کے سبب پوری تیاری کر لی ہے۔ صنعت و معیشت ،ماحولیات، زراعت ، معدنیات، سیاحت اور کاروبار کے تمام شعبوں میں ملکی غیر ملکی سرمایہ کاری کے لئے سہولیات گارنٹیوں اور پرکشش ترغیبات کے اعلانات اور پالیسیوں کی تیاری کے علاوہ ہم نے اگلے مہینے چین میں منعقد ہونے والے بیجنگ روڈ شو کے دوران بین الاقومی سرمایہ کاری کے لحاظ سے اہم ترین ایک سو منصوبے پیش کرنے کا پلان بنایا ہے تاکہ دنیا ہمارے صوبے میں سرمایہ کاری کے بیش بہا مواقع اور وسائل کی بہتات کے بارے میں جان سکے اور ان سے استفادے کے ضمن میں ہم غیر ملکی سرمایہ کاروں کو باآسانی معاونت اور سہولیات بھی مہیا کرنے کے لئے دستیاب نظر آئیں۔
<><><><><><><><>

بہ تسلیمات پریس سیکرٹری برائے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا
ہینڈ آوٹ نمبر۔2 ۔پشاور۔4 اپریل2017 ء
وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے امام کعبہ شیخ عبدالرحمان السدیس کو اُن کے 8 اپریل کو خیبرپختونخوا کے دورے کے موقع پر صوبائی حکومت کے مہمان کی حیثیت سے مدعو کیا ہے ۔ اُن کی طرف سے سعودی سفیر کو لکھے جانے والے ایک خط میں وزیراعلیٰ نے اس خواہش کا اظہار کیا ہے کہ امام کعبہ اپنے دورے کے دوران صوبائی مہمان کے طور پرپشاور کا دورہ کریں ۔ صوبائی حکومت امام کعبہ کی سرکاری حیثیت میں مہمان نوازی کے علاوہ اُنہیں اسلامی قوانین کے نفاذ اوردینی اقدار کی ترویج کے سلسلے میں صوبائی حکومت کے اقدامات سے بھی آگاہ کریں گے اور اُن سے مستقبل کے لائحہ عمل پر رہنمائی حاصل کریں گے۔وزیراعلیٰ امام کعبہ کو صوبے میں نجی سودی کاروبار پر پابندی سمیت اسلامی قوانین کے نفاذ، دینی مدارس کے لئے خصوصی فنڈ کے اجراء ، نیز پہلی بار ختم نبوت اور سیر ت النبیؐ کے مضامین کو تعلیمی نصاب میں شامل کرنے اور پرائمری سکولوں کی سطح پر ناظرہ قرآن جبکہ انٹرمیڈیٹ تک قرآن با ترجمہ پڑھانے سمیت اسلامی تعلیمات کے فروغ کیلئے صوبائی حکومت کے اقدامات سے آگاہ کریں گے ۔وزیراعلیٰ نے امام کعبہ کے سرکاری سطح پر استقبال اور مکمل سکیورٹی پروٹوکول کی ہدایت بھی کردی ہے ۔
<><><><><>

4-apr4-4-2017 CM Photos exchanging view signing MoU and talking to media with Malaysian Ex-premier1

4-apr4-4-2017 CM Photos exchanging view signing MoU and talking to media with Malaysian Ex-premier2

4-apr4-4-2017 CM Photos exchanging view signing MoU and talking to media with Malaysian Ex-premier3

4-apr4-4-2017 CM Photos exchanging view signing MoU and talking to media with Malaysian Ex-premier4

4-apr4-4-2017 CM Photos exchanging view signing MoU and talking to media with Malaysian Ex-premier5