مرحب کی سیاسی روایات By Muhammad Tahseen

Created on Thursday, 10 August 2017 10:08 | 426 Views
  • Print
  • Email

marhab ki siyasi rawayat by muhammad tehseen

جمہوریت کی بالادستی کا ڈھنڈورا پیٹنے والے مرحب نے ایک ڈکٹیٹر کی گود میں سیاسی آنکھ کھولی۔ ڈکٹیٹر کے کندھوں پر چڑھ کر ہی اقتدار کی سیڑھی عبور کی۔ پاکستان میں سب سے لمبے عرصے تک حکومت کرنے والے ڈکٹیٹر کو اپنا روحانی باپ قرار دیا اور اس کے مشن کو جاری رکھنے کی قسمیں کھائیں۔ راولپنڈی میں ہی خطاب کے دوران پاکستان کے دو مرتبہ کے منتخب وزیر اعظم اور ایک مرتبہ کے منتخب صدر ذوالفقار علی بھٹو کی پھانسی کی جگہ پر نشان عبرت تعمیر کرنے کا وعدہ کیا۔ یہ سب باتیں ویڈیوز، آڈیوز اور کتابوں کی شکل میں تاریخ میں محفوظ ہیں۔ جونجیو جیسے شریف النفس وزیر اعظم کو گھر بھیجنے میں بنیادی قردار ادا کیا۔ آئی ایس آئی سے پیسے لے کر آئی جے آئی بنائی اور بینظیر کے خلاف سازش کی۔ اصغر خان کیس میں سپریم کورٹ فیصلہ دے چکی ہے لیکن عملدرآمد نہیں ہوا۔ دو مرتبہ منتخب وزیر اعظم بینظیر بھٹو کی حکومت گرانے میں بھی ان کا کردار کلیدی تھا۔ اسامہ بن لادن سے پیسے لے کر بینظیر کے خلاف سازشیں کرنا بھی تاریخ کا حصہ ہے۔ مرحب نے پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ذاتیات پر حملوں کی سیاست متعارف کروائی۔ نصرت بھٹو اور بینظیر بھٹو کی کردار کشی کی مہم چلائی۔ انسانی تاریخ میں پہلی بار کسی خاتون کی عریاں تصویریں آبادیوں پر گرانے کے لیے جہاز کا استعمال کیا گیا۔ یہاں تک کے بھارت کے وزیر اعظم تک کے ساتھ بینظیر کے جھوٹے سکینڈلز بنوائے۔ مرحب صاحب آپ کے گرد جمع چند ٹکا ماری کرنے والے لوگ بھول گئے ہونگے ہم پاکستانیوں کو سب یاد ہے۔ مرحب صاحب چھانگا مانگا تو یاد ہی ہوگا آپ کو؟ جنرل وحید کاکڑ کو بی ایم ڈبلیو کی چابی کس نے بھجوائی تھی؟ کیا کوئٹہ بینچ کے ججز کو رفیق تارڑ کے ہاتھوں بریف کیس بھی کسی ڈکٹیٹر نے بھجوائے تھے؟ وکیل کی کرنا جج ای کر لئو کا مقولہ آپ ہی کے مرہون منت ہے۔ کیا شہباز شریف کی جسٹس ملک عبدالقیوم کو کی گئی کال بھی آپ کے خلاف سازش تھی؟ مرحب صاحب یہ تو صرف ایک کال تھی جو سامنے آگئی لیکن آپ کے اندر کی خباثت کو کھول کر سامنے رکھ دیا۔ مرحب صاحب آپ اپنی پوری سیاسی تاریخ میں سے بتا دیں سوائے اس ڈکٹیٹر کے جو آپ کو اقتدار میں لایا کسی آرمی چیف سے آپ کی بنی؟ کیا سب ہی گندے تو اور ایک آپ ہی پوتر ہیں؟ مرحب صاحب آپ جس ڈھٹائی سے جھوٹ بولتے ہیں تو لگتا ہے شاید آپ نے جان نہیں دینی آپ کہتے ہیں کہ میرے ہاتھ صاف ہیں لیکن جب عدالت آپ کے خلاف فیصلہ دینے لگتی ہے تو آپ سپریم کورٹ پر بھی حملہ کردیتے ہیں۔ مرحب صاحب یہ بھی آپ ہی کی تابندہ اور درخشندہ سیاسی روایات کا حصہ ہے کہ سپریم کورٹ پر حملہ کروایا۔ مرحب صاحب آپ نے ساری دنیا کے سامنے جھوٹ بولا کے آپ کو زبردستی جلاوطن کیا گیا لیکن ایک ڈکٹیٹر کے ساتھ آپ کا معاہدہ کروانے والوں نے خود ہی سامنے آکر آپ کی منافقت بے نقاب کردی۔ مرحب صاحب آپ سات سال تک ملک سے باہر رہنے کے بعد بھی کچھ نا سیکھے۔ کیا یوسف رضا گیلانی منتخب وزیر اعظم نا تھے؟ ان کے خلاف عدالت کون جاتا تھا؟ کون عدالت کا فیصلہ آنے سے پہلے ہی ان پر مستعفی ہونے کے لیے دباؤ ڈالتا تھا؟ مرحب صاحب کون کہتا تھا کہ یہ انسانوں کی بستی ہے حیوانوں کی نہیں کہ عدالت کے فیصلے کو نامانا جائے۔ مرحب صاحب پانامہ لیکس کس ڈکٹیٹر کی سازش ہے ہمیں بھی بتائیں؟ ذرا ہمیں بھی سمجھائیں مرحب صاحب کے سترہ سال کی عمر میں آپ کے بچوں نے دنیا کے مہنگے ترین علاقے میں محلات کیسے خرید لیے؟ چلیں مرحب صاحب اور کچھ نہیں تو کوئی ایک دستاویز کوئی ایک ثبوت تو عدالت کو دے دیتے کیا اس بھی آپ کو جج اور جنریل روک رہے تھے؟ مرحب صاحب کپاکستان کے ادراوں کے سربراہ آپ کے کاروباری ریکارڈ میں ٹیمپرنگ کس ڈکٹیٹر کے کہنے پر کروا رہے ہیں؟ مرحب صاحب خوف خدا تو شاید کبھی آپ کو چھو کر بھی نہیں گذرا کہ آپ اب بھی پوری ڈھٹائی سے جھوٹ بول رہے ہیں کہ آپ کو صرف اقامہ پر نااہل کیا گیا۔ مرحب صاحب جے آئی ٹی کے والیم ٹین کو کھولنے کے مطالبے سے کس طرح پیچھے ہٹ گئے؟ یہ کیلبری فونٹ کا کیا قصہ ہے مرحب صاحب؟



اور اب آپ نے ایک نئی روایت بھی ڈال دی کہ اگر طاقتور ہو تو عدالت کا فیصلہ ماننے سے انکار کردو اور سڑکوں پر آکر عدالتوں کو للکارو تاکہ آئندہ کسی ادارے کو جرات نا ہو کہ وہ آہ جیسے کسی مہا کرپٹ انسان پر ہاتھ ڈالنے کا سوچے۔ مرحب صاحب آپ کل فرمارہے تھے کہ میں پاکستان کا نام روشن کرنا چاہتا ہوں۔ آپ کو پینتیس سال ہوگئے سیاست کرتے آخر کب وہ ید بیضاء نکالیں گے؟ مرحب صاحب یہ جو آپ کی انمول جاویداں سیاسی روایات ہیں کیا ان سے ہوگا پاکستان کا نام روشن؟